Breaking News

نعت پاک ﷺازقلم محمد شکیل قادری بلرام پوری

شہ مدینہ کے ہاتھ پر جب
غلام ان کا بکا ہوا ہے
لگائے کیا کوئی مول اس کا
وہ گوہر بے بہا ہوا ہے

ہے تو ہی وجہ وجودِعالم
ہیں تجھ سے حوا تجھی سے آدم
تری ہی نورانیت سے آقا
یہ سارا عالم سجا ہوا ہے

نہ کیسے ہو اس کے غم کا ساماں
غریب کیسے رہے وہ انساں
تمہارے در سے شہِ مدینہ
جسے بھی صدقہ عطا ہوا ہے

اسی کی خاطر ہے میزبانی
برائے موسیٰ ہے لن ترانی
وہ آمنہ کے جگر کا ٹکڑا
خدا کا مہماں بنا ہوا ہے

نگاہِ لطف و کرم ہو آقا
تمہی ہو دونوں جہاں کے ملجا
تمہارے در پر تمہارا منگتا
پسارے دامن کھڑا ہوا ہے

امیہ سے یہ بلال بولے
تو چاہے جتنا بھی ظلم کرلے
نہ چھوٹے گا مجھ سے ان کا دامن
یہ دل نبی پر فدا ہوا ہے

نصیب والوں میں نام آئے
صبا خدارا پیام لائے
شکیلِ خستہ چلو مدینہ
کہ اذنِ آقا ملا ہوا ہے

ازقلم محمد شکیل قادری بلرام پوری

About محمد شاہد رضا برکاتی

Check Also

نعت شہ کونین صلی اللہ علیہ وسلم۔۔۔۔۔۔از: سید خادم رسول عینی قدوسی ارشدی

میری آنکھوں میں ہے طیبہ کا نظارا باقیجو فنا ہو نہ سکے ایسا ہے جلوہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے